Eardrum Perforation - a Herbal Solution.

Eardrum Perforation - a Herbal Solution.

www.EardrumPerforation.com Deposit Rs 3000 in the following account number and intimate the same with mailing address. Account Name : Minu Dogra
Savings Account at ICICI BANK LTD.

at Phase 2 , Ashok Vihar, Delhi 110052. Account Number 033101004014.

paypal.com 09/03/2018

Send Money, Pay Online or Set Up a Merchant Account - PayPal

کسی آدمی کے ایک یا دونوں کانوں میں سوراخ ہو سکتے ہیں۔ سوراخ پیدائشی بھی ہو سکتے ہیں۔ کوئی مسئلہ نہیں.

اگر کسی قسم کا مواد باہر نہیں آرہا ہے اور سماعت ٹھیک ہے - تو اس سلسلے میں کچھ پریشان نہ ہوں. کان کے پردے میں سوراخ ہونے کے باوجود، لوگ عمر بھر معمول کی زندگی گزارتے ہیں۔
صرف احتیاط کو برقرار رکھیں کہ کوئی بیرونی پانی کسی بھی دو کانوں میں داخل نہ ہو. غسل یا کسی اور صورت میں دونوں کو بیرونی پانی سے محفوظ کیا جانا چاہئے.

جب مواد نکلنا شروع ہو جائے یا سماعت اس انفیکشن سے بری طرح متاثر ہو جائے، اس صورت میں ایکشن لینے کی ضرورت ہوتی ہے.

اگر آپ کے دونوں کانوں میں سوراخ ہیں، تو شروعات اس کان سے کریں جس کا سوراخ چھوٹا ہے، جب تک کہ دوسرے کان سے بھی بہاؤ شروع نہ ہوجائے.

اگر دونوں میں بہاؤ ہو تو آپ دونوں میں ایک ساتھ شروع کریں.

بہاؤ کا مطلب ہے فعال انفیکشن.

میری تمام ویڈیوز، مضامین اور ویب سائٹ کا بغور مطالعہ کریں اور مشورہ و ہدایات پر عمل کریں.

آپ کے تقریبا 100 فیصد سوالات کے جوابات دیے جاتے ہیں.

ہمارے ڈراپ کیسے آرڈر کرنا ہے یہ بھی وہاں درج ہے۔

پڑھنے اور سمجھنے کے بجائے، لوگ بآسانی مجھ سے یقین دہانی کیلیے فون کرنے کو بے چین رہتے ہیں۔یہ مناسب طرز عمل نہیں ہے۔

مسئلے کے تعلق سے آپ کو واقف کار ہونا چاہیے اور اس سے بھی کہ کامیابی حاصل کرنے کے لیے آپ کتنے اچھے طریقے سے ہمارے آلات کا استعمال کرسکتے ہیں.

صرف ہماری یقین دہانی سے کامیابی نہیں ملے گی، لیکن اگر آپ ہدایات پر عمل کرتے ہیں تو اس صورت میں کافی امکان ہوتا ہے.

ہم واضح طور پر یہ بتاتے ہیں کہ ہمارے پودوں سے بنائے گئے کان کے قطرات، پوری دنیا میں قدرتی طور پر کان کے پردے کو بند کرنے کا واحد حل ہیں.

ہمارے علاج کی منطق اور تصور کو ذیل میں واضح و نمایاں طور پر بیان کیا گیا ہے، ساتھ ہی ساتھ خرد حیاتیاتی (مائیکرو بایولوجیکل) سرٹیفکیٹ بھی دیا گیا ہے جو یہ بتاتا ہے کہ ہمارے پلانٹ کے پودوں سے نکالے گئے اجزاء عالمی طور پر کتنے ممتاز ہیں۔

----------------------

مکمل شفاء اور کان کے پردے بند کرنے کے ضمن میں میں تنہا ہماری کامیابی کی شرح 60 سے 70 فیصد ہے.

ہماری کامیابی کی شرح سنگین یا دائمی وسط کان انفیکشن جس کے ساتھ مواد کا خروج یا سیال کا بہاؤ ہو رہا ہے، کے معاملات میں 100 فیصد ہے.

ہماری علم و تحقیق کے مطابق - ہم پوری ذمہ دارے کے ساتھ یہ کہہ رہے ہیں کہ ہمارے پودوں سے نکالے گئے قطرے (ایئر ڈراپ) ہم سے بہتر یا ہمارے لئے بہتر نہیں بنائے جا سکتے ۔

مکمل طور پر بند کر دینے کے عمل میں 100 فیصد سے کم کامیابی کی شرح نہ دے پانے کیلیے کوئی عذر نہ پیش کرتے ہوئے، ہم یہ عرض کرتے ہیں کہ بہت سارےعوامل ہیں جو کام کرتے ہیں، اور ہمارے کنٹرول سے باہر ہیں.

ويديا راج انل ڈوگرا
981026070491+

ENT ڈاکٹر اور ہسپتال عالمی سطح پر دائمی ’اوٹیٹیس میڈیا وِد افیوژن‘ (OME) کے خلاف غیر مؤثر ہیں.
OME کو متواتر وسط کان انفیکشن جس میں مواد یا سیال بھی ہوتا ہے یا دائمی سپریٹیو اوٹیٹیس میڈیا بھی کہا جاتا ہے۔ اسے عام طور پر 'چیپ دار (گلو) کان' کہا جاتا ہے.

سادہ زبان میں، OME یہ ہے کہ جب آپ محسوس کرتے ہیں کہ آپ کا کان درد کے ساتھ یا اس کے بغیر، بند ہے یا مائع سے بھرا ہوا ہے، اور تب بھی جب ایسی صورت حال بار بار ہوتی ہے، دو سے تین بار اینٹی بائیوٹک نگرانی کے مسلسل کورسز کے بعد بھی.

دائمی OME صورت حال میں، کان کے پردے کے پیچھے، وسط کان میں سیال کا دباؤ پیدا ہوتا ہے - اور اس کا دباؤ آخر میں کان کے پردے کو پھاڑ دیتا ہے.

OME انفیکشن کے خلاف اینٹی بائیوٹک کی یہ غیر اثر اندازی، دنیا میں کان کے پردے کے سوراخ کی اہم وجہ ہے.

ویدیا راج انل ڈوگرا کا پلانٹ ایکسٹریٹ (پودوں سے نکالا گیا مادہ)، سب سے سخت جان سپر بیکٹیریا جیسے سووڈوموناس ایروگینوسا، ایم آر ایس اے اور ای. کولی کو ختم کر دینے کے ضمن میں، شری رام انسٹی ٹیوٹ آف انڈسٹریل ریسرچ، نئی دہلی، بھارت کی معروف مائیکرو بایولوجی (خرد حیاتیاتی) لیب سے سند یافتہ ہے۔
یہ دریافت 1930 ء میں الیگزینڈر فیممنگ کی پنیسلِن کی دریافت کے مشابہ ہے۔
پنیسلِن کی دریافت کے ساتھ ہی اینٹی بائیوٹک کا دور شروع ہوا، اور اب یہ ، اینٹی بائیوٹک مزاحم سپربَگ یا سپر بیکٹیریا کی آمد اور پھیلاؤ کے باعث اپنے اختتام کو پہنچ چکا ہے.

سالانہ - او ایم ای سے متاثر امریکی بچوں کے 2 ملین کان کے پردوں میں ، بالارادہ پردے کے پار ایئر ٹیوب جیسی پائپ ڈالنے کی غرض سے سرجری کے ذریعے سوراخ کیا جاتا ہے تاکہ وسط کان کے سیال کو نکالا جا سکے، ورنہ یہ سیال کان کے پردے کو پھاڑ دیتا ہے۔

ایئر ٹیوب ایک سال یا اس سے زائد کے لئے رہتی ہیں، اور پھر یا تو گر جاتی ہیں، یا سرجری سے ہٹا دی جاتی ہیں، اس امید کے ساتھ کہ وہ چھوٹے سوراخ قدرتی طور پر از خود بند ہو جائیں گے۔

لیکن - 10 سے 20 فی صد معاملات میں- یہ بند نہیں ہوتے.

اگر یہ معاملہ دنیا کے سب سے بہترین ملک اور بہترین معیشت کا ہے، تو اس بات کا بخوبی تصور کیا جا سکتا ہے کہ دنیا بھر میں کیا ہو رہا ہوگا۔.

ایئر ٹیوب ایک طبی مسئلے کا صرف ایک مکینیکل حل ہیں، اور موجود انفیکشن کے تئیں کچھ نہیں کرتیں.
انفیکشن جو کہ بنیادی مسئلہ ہے، باقی رہتا ہے۔

ایئر ٹیوب، کان کے پردے میں سیال کے دباؤ کو بآسانی نکالنے کیلیے پہلے سے ہے ایک چھوٹا سا سوراخ بنا کر کسی بڑے سوراخ کے امکان کو روک دیتے ہیں۔

کان کے پردے کے سوراخ کو سمجھیں:

کان کے پاردے کا سوراخ آپ کی جلد پر ہونے والے کسی زخم کی مانند ہے۔
اگر باڈی امیونٹی اور عام انفیکشن کا معاملہ ٹھیک ٹھاک ہے تو، زخم قدرتی طور پر بند ہو جاتا ہے.

جیسے آپ کے بال آہستہ آہستہ واپس آتے ہیں، زخم البتہ مزید دھیمی رفتار سے بھرتا ہے - لیکن یہ بھرتا ضرور ہے۔ آپ کو صرف اس کے سلسلے میں صبر کرنا ہوتا ہے

لیکن اگر باڈی امیونٹی کم ہے - جیسے کہ بچے میں - یا بیکٹیریا ایک سپر بیکٹیریل انفیکشن ہے (ایسا انفیکشن جو اینٹی بائیوٹکس سے ہلاک نہیں ہوتا یا ایک اینٹی بائیوٹک مزاحم انفیکشن) ایسی صورت میں ایک کان کے پردے کے سوراخ یا زخم کے بند کرنے کے قدرتی عمل میں مداخلت یا رکاوٹ ہو جاتی ہے اور یہ رک جاتا ہے۔

سپر بیکٹیریل انفیکشن زخم یا سوراخ کو بند کرنے کے قدرتی عمل کو روک دیتا ہے.

اس طرح کے معاملات میں -

آپ اینٹی بائیوٹکس کو روک کر، اچھی اور متوازن غذا لے کر باڈی امیونٹی کو دوبارہ پیدا کرتے ہیں۔

ہمارے پلانٹ ایکسٹریکٹ کے ساتھ، آپ آہستہ آہستہ لیکن یقینی طور پر اور لگاتار انفیکشن کو کم کرتے ہیں۔ اور زخم / سوراخ کے بند ہونے کا قدرتی عمل دوبارہ شروع ہو جاتا ہے!

یہ وہ منطق ہے جس کے ساتھ ہم کرتے ہیں، اور تنہا یہی وہ طریقہ ہےجو سوراخ کے بند ہونے کے قدرتی جادو کو دوبارہ پیدا کر سکتا ہے۔

ہمارے ویب پیج پر زیادہ تر وزیٹر وہ ہیں جن کے کان کے پردے میں پہلے سے ہی سوراخ ہوتا ہے۔

آپ ہمیں ڈھونڈتے ہوئے آتے ہیں۔

لیکن آپ کان کے پردے کو کسی سوراخ سے بچانے میں دیگر لوگوں کی مدد کر سکتے ہیں۔

جو معلومات آپ کو یہاں مل رہی ہے انہیں اس کا علم نہیں۔

آپ کے خاندان اور دوستوں میں ایسے دسیوں لوگ ہوں گے، زیادہ تر 15 سال یا زائد عمر کے بچے، جو کسی کان کے درد یا وسط کان کے انفیکشن یا ایک او ایم ای انفیکشن سے متاثر ہوں گے یا متاثر ہونے والے ہوں گے- اور جس کا نتیجہ ممکنہ طور پر سپر بیکٹیریل انفیکشن ہو سکتا ہے ...

اور جس کی بنا پر ان کے کان کا پردہ پھٹ سکتا ہے۔

لیکن انہیں ہمارا علم نہیں۔

اس علم کو عام کیجیے اور

ایک بچے کے کان کے پردے کو بچائیے۔

سیال کے ساتھ دائمی وسط کان انفیکشن کی وجہ سے ایک ممکنہ کان کے پردے کے سوراخ کو بچانا ہمارے لئے، صرف ہمارے رقیق ایئر ڈراپ کے ذریعے، محض ایک یا دو دن کا معاملہ ہے.

دائمی وسط کان انفیکشن اور پھٹے ہوئے یا سوراخ شدہ کان کے پردے کی مرمت کیلیے انل ڈوگرا کا ایئر ڈراپ - مکمل قدرتی. مکمل ہربل۔ ہر عمر کے لئے مناسب۔

فوری ہدایات-
---------------------------------

برائے مہربانی فوری طور پر اورل (منہ سے لینے والی) اینٹی بائیوٹیکٹس کا استعمال بند کریں۔ اس کے بجائے، ہری سبزیوں کا گرم سوپ یا تازہ جوس ایک ہفتے میں کئی بار لیں۔

غسل کے دوران کچھ بھی پانی کانوں میں داخل نہ ہو، خصوصا اگر کان کے پردے میں سوراخ ہو۔ غسل کرنے کے دوران کان میں کاٹن بال لگا لیں۔ آپ کاٹن بال پر تھوڑی ویسلین لگا سکتے ہیں - یہ پانی کو روک دے گا۔

سوراخ کی مرمت ہو جانے کے کم از کم ایک سال بعد تک بھی، کوئی تیراکی یا مذہبی غسل نہ کریں۔

کوئی کیمیکل یا ہوموپیتھک یا گھریلو ہربل دوائیں اس دوران کان میں نہ ڈالی جائیں۔

ہمارے ہربل ڈراپ پیکیج میں کیا ہے ----------------------------------

ہمارے خالص پلانٹ ایکسٹریکٹ ڈراپ، ماسٹر ڈراپ ہیں.

دیگر تمام ڈراپ کسی بھی وقت ان خالص ڈراپ کے ذریعے بنائے جا سکتے ہیں.

یہ ڈراپ وقت کے ساتھ ساتھ سیاہ ہوسکتے ہیں یا ان میں پودوں کے منجمد بقایا جات دکھ سکتے ہیں - یہ معمول کی بات ہے - ان کی تاثیر اور صلاحیت ہمیشہ برقرار رہتی ہے. ہمارے قطرے کی کوئی اختتامی تاریخ نہیں. انہیں صاف جگہ پرعام درجہ حرارت میں رکھا جا سکتا ہے، سورج کی راست روشنی سے دور، جہاں تک ممکن ہو.

کسی ماحولیاتی جرثومے میں یہ صلاحیت نہیں کہ وہ ہمارے ڈارپس کو ختم کر سکے۔ یہی وجہ ہے کہ وہ ٹھیک رہتے ہیں - ہمیشہ.

ہم چار 10 ملی لیٹر / 300 ڈراپ ڈراپر بوتلیں بھیجتے ہیں.

دو بوتلوں میں ہمارے خالص پلانٹ ایکسٹریکٹ ہوتے ہیں جو مجموعی طور پر 600 خالص پلانٹ ایکسٹریکٹ ڈراپ بنتے ہیں.

آپ کے سوراخ کے علاج کے لیے، آپ کو مزید خالص ڈراپ کی ضرورت نہیں ہوگی.

ہمارے علاج کی کامیابی یا ناکامی صرف ان بہت سے ڈراپ سے ہی برآمد ہو جائے گی، اور ممکن ہے ان سب کے بعد بھی کچھ بچا رہ جائے. وہ کبھی خراب نہیں ہوتے۔

رقیق ایئر ڈراپ کی ایک بوتل جس میں 10 ملی لیٹر صاف پانی میں خالص ایکسٹریکٹ کی 25 بوندوں کو ملا دیا جائے۔
آپ مزید خالص ڈراپ لے کرکے کسی بھی وقت اس کی صلاحیت بڑھا سکتے ہیں.

چوتھی بوتل 10 ملی لیٹر نیزل (ناک کی) ڈراپ بوتل ہے، جو کسی بھی وقت ہمارے خالص پلانٹ ایکسٹریکٹ کے 4 قطرے، اور باقی 10 ملی لیٹر صاف پانی کو ملا کر بنایا جا سکتا ہے۔.

اس طرح کسی بھی وقت، خالص ایکسٹریکٹ ڈراپ کے ذریعے، نیزل ڈراپ اوررقیق ایئر ڈراپ بنائے جا سکتے ہیں.

نیزل ڈراپ -
-----------------------

ناک کے ہر نتھنے میں روزانہ ایک مرتبہ نیزل ڈراپ کے دو قطرے ڈالیں، یا اگر ضرورت ہو تو کئی مرتبہ بالخصوص جبکہ نزلہ یا ناک منجمد ہو جائے یا گلے کے انفیکشن کا مسئلہ ہو۔
یہ سائینوسائٹس کا واحد حقیقی حل ہے.
اس سے وسط کان انفیکشن میں مدد ملے گی کیونکہ یہ سب آپس میں داخلی طور پر ملے ہوئے ہوتے ہیں۔

ایئر ڈراپ کا انتظام و انصرام
-------------------------------

کان کے درد یا دائمی وسط کان انفیکشن کے لئے - جبکہ ابھی تک کوئی سوراخ نہ ہوا ہو:

صرف ہمارے رقیق ڈراپ کے ذریعے اپنے کان کے پردے کو بچائیں۔

متعلقہ کان میں رقیق ایئر ڈراپ کے 4 قطرے ڈالیں اور اسے 2 منٹ تک رہنے دیں.
اس کے بعد جب آپ سیدھی کھڑے ہوں توکان سے جو بھی باہر نکلے اسے کاٹن سے صاف کریں.
آپ ایک بار سے لے کر ایسا کرنے کے لئے ایک بار ایسا کر سکتے ہیں جب تک کہ آپ کی شدت اور / یا درد مکمل ختم نہ ہوجائے اور آپ نارمل محسوس نہ کرنے لگیں۔

ہمارے قطرے ٹنیٹس (سنسناہٹ) کے لئے نہیں ہیں اگرچہ اس میں مدد مل سکتی ہے، جب انفیکشن ختم ہو جائے.
ٹنیٹس (سنسناہٹ) دماغ سے منسلک اندرونِ کان کا ایک مسئلہ ہے، اور ڈراپ اندرونِ کان نہیں پہنچتے.

نتیجتہ سماعت کتنی بہتر ہوگی، یہ محض ایک قیاس ہے۔ صرف وقت ہی یہ بتا سکتا ہے.

تیراکوں کیلیے - تیراک، انفیکشن سے بچنے یا اس کی روک تھام کے لیے، ہر تیراکی، غوطہ خوری، سرف بورڈنگ یا سکوبا ڈائیونگ کے بعد دو منٹ کے لئے رقیق ایئر ڈراپ کے چار قطرے ڈالیں۔
مندرجہ بالا طریقے کے مطابق، ایک مرتبہ نیزل ڈراپ بھی ڈالے جائیں۔

کان کے پردے کے سوراخ کی صورت میں-

رقیق ڈراپ ڈالنے سے شروع کریں۔ روزانہ ایک مرتبہ، 2 منٹ کے لئے رقیق پلانٹ ایکسٹریکٹ کے 2 سے 4 قطرے ڈالیں۔.

اگر اسٹِنگِنگ (چبھن/ڈنک) قابل برداشت ہے یا بالآخر قابل برداشت ہو جاتی ہے تو آپ ہر دوسرے دن خالص ڈراپ ڈالنا شروع کر دیں۔

اگر اسٹِنگِنگ (چبھن/ڈنک) قابل برداشت رہتی ہے، آپ خالص ڈراپ جاری رکھیں ورنہ آپ دوبارہ رقیق ڈراپ استعمال کرنا شروع کر دیں۔

بالآخر اسٹِنگِنگ (چبھن/ڈنک) بالکل کم ہو جانی چاہیے، ایسے میں آپ واپس خالص ڈراپ لینا شروع کر سکتے ہیں۔

یہ مذکورہ بالا عمل بہت سے لوگوں کے تئیں کچھ زیادہ وقت بھی لے سکتا ہے. اس سلسلے میں سوائے صبر کے اور کچھ نہیں کیا جا سکتا ہے۔

خالص ایکسٹریکٹ ڈراپ کو ہر دوسرے دن لیا جانا چاہیے۔

دو منٹ کیلیے دو سے تین خالص ڈراپ کافی ہے۔

کوئی بھی باہری پانی متعلقہ کان میں اس وقت تک داخل نہ ہو جب تک وہ مکمل طور پر ٹھیک نہیں ہو جاتا یا حتی کہ اس کے ایک سال بعد تک بھی۔

ایک بار جب مواد باہر نکلنا بند ہو جاتا ہے، اور اسٹِنگِنگ (چبھن/ڈنک) مکمل طور پر بند ہو جاتی ہے، اس سے پتہ چلتا ہے کہ انفیکشن بے اثر ہو گیا ہے.

اس وقت، آپ نے پہلے ہی سے خالص ڈراپ ڈالنے شروع کر دیے ہیں اب صرف خالص ڈراپ ہی ڈالنا جاری رکھیں، ہر دوسرے دن۔

اینٹی بائیوٹک مزاحمت اور سپر بگ جیسے کہ سیوڈونوماس ایرگینوسا، ایم آر ایس اے، ای کولی کے ضمن میں انفیکشن کو بے اثر کرنا کوئی معمولی حصولیابی نہیں۔

یہ سپر بگ دنیا بھر میں تباہی مچا رہے ہیں۔ انہیں صرف ہمارے پلانٹ ایکسٹریکٹ کے ذریعے ہی بے اثر کیا جا سکتا ہے۔

معروف شری رام انسٹی ٹیوٹ فار انڈسٹریل ریسرچ، نئی دہلی، انڈیا کی سندوں کی کاپیاں، مذکورہ تمام تفصیلات پر مشتمل، اسی سائٹ پر شائع شدہ ہیں۔

ایک بار جب انفیکشن بے اثر ہوجاتا ہے، تو سوراخ کا سائز چیک کیا جانا چاہیے، اور ای این ٹی ڈاکٹر سے اس کا اندازہ لگوایا جائے۔

ہر دوسرے دن ایک بار خالص ڈراپ لینا جاری رکھیں اور 40 دن کے بعد سوراخ کا سائز دوبارہ چیک کریں، اور پھر اگر ممکن ہو، اسی ای این ٹی ڈاکٹر سے 80 دن کے بعد دوبارہ چیک کرائیں۔

اگر دوسری یا تیسری چیک میں یہ معلوم ہوتا ہے کہ شفا یابی / مرمت یا بند ہونے کا عمل جاری ہے اور سوراخ کا سائز کم ہوگیا ہے، تو یہ ہمارے خالص ڈراپ کا استعمال کرتے ہوئے چند مہینوں میں بند ہو جائے گا، ورنہ آپ کو سرجیکل ریپئر کے لے جانا پڑ سکتا ہے.

اضافی پوائنٹس -

وقت گذرنے کے ساتھ بوتل کے اطراف عرق گاڑھا/ کالا ہوسکتا ہے،

يہ عرق ويديا راج انل ڈوگرا اينڈ فيملى کے ذريعہ ہاتھوں سے بنايا جاتا ہے

ويديا راج انل ڈوگرا

981026070491-

مندرجہ بالا سیٹ کی قیمت بشمول شپنگ چارج بھارت کے اندر 3700.00 روپے ہے۔ قیمتیں کسی بھی وقت تبدیل کى جاسکتى ہيں

عام طور سے مکمل شفا يابى کے ليے خالص عرق کى ضرورت نہيں ہوتى ہے۔ اگر آپ کو اضافی ضرورت ہے تو ایک مکمل سیٹ دوبارہ آڈرکرنا پڑے گا جيسا کہ اوپر ذکر کيا گيا ہے۔

مذکورہ بالا سيٹ کى قيمت بھارت کے باہر شپنگ سمیت 95.00 امریکی ڈالر ہے.

ہم اسے متحدہ عرب امارات، سعودی اور دیگر اسلامی ممالک ميں نہیں بھیج سکتے ہیں، ہربل کی مصنوعات پر درآمد کى پابنديوں کى وجہ سے۔

یہ پاکستان بھيجا جا سکتا ہے.

آپ www.Paypal.com کا استعمال کرکے ہمارے ای میل ایڈریس [email protected] پر ادائیگی کر سکتے ہیں یا منیگرام یا ویسٹرن یونین کے ذریعہ درج ذیل تفصیلات کے مطابق بھيج سکتے ہيں۔
انل کمار ڈوگرا، آئی اے / 20 اے، فيس ون، اشوک ويہار، دہلى، بھارت - 110052. فون 98102607091-.
پھر آپ تفصیلات ہمارے ای میل ایڈریس پر بھیج سکتے ہیں [email protected].

بھارت کے اندر - برائے مہربانی مندرجہ ذیل اکاؤنٹ میں رقم جمع کروائيں اور مذکورہ بالا اى ميل پريا ایس ایم ایس یا واٹساپ کے ذريعہ ہمارے فون پر 9810260704 پر، نام، ایڈریس، پن کوڈ اور فون نمبر کے ساتھ مطلع کریں.

ایس بی آئی بینک برانچ اشوک ویار، فیز 1، دہلی 110052، بھارت میں مسز مينو ڈوگرا کے بجت کھاتہ نمبر 35782552316 میں 3700 روپئے جمع کریں. NEFT IFSC کوڈ SBIN0007783 ہے.

سوالات:

1.) جب کان کا پردہ بالکل صحيح سالم ہو اور آدمى کے کان ميں درد ہو اور/يا کان کے بيچ ميں انفيکشن ہو، اى اين ٹى (آنکھ، ناک اور گلے) کے ڈاکٹر کان کے کسى بھى ڈراپ استعمال کرنے سے روکتے ہيں، اوراس صورت ميں جب کان کے پردے ميں چھيد ہو تو کوئى بھى ڈراپ نہ رکھنے کے بارے ميں آگاہ کرتے ہيں۔ تو بتائيے آپ کا کان ڈراپ آپ کو کيوں اور کيسے مدد کرسکتا ہے۔

اى اين ٹى ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ بيچ کان کا انفیکشن یا اوٹیٹیس میڈیا کا علاج کرنے کے لئے کان کا کوئى ڈراپ استعمال نہ کريں کیونکہ کوئى بھی ڈراپ صحيح سالم کان ميں داخل نہیں ہوسکتا ہے.

ميں قطعى طور پر يہ بيان اور دعوى کرتا ہوں کہ ہمارا کانوں کا ڈراپ ہر طرح کے پھوڑے يا کان کے درميانى حصے کى سوجن کا علاج کرسکتا ہے، ہر عمر ميں ايک دن سے ايک ہفتے کے اندر کان کا پردہ صحيح سالم ہوجاتا ہے۔

کوئی اورل اینٹی بائیوٹیکٹس کی ضرورت نہیں ہے.

کم سے کم يہ کہہ سکتے ہيں کہ جدید میڈیکل سائنس زير ترقى ہے۔

اصل میں اوسمیسس کے ذریعہ ہمارا کان کا ڈروپ کان کے پردہ تک پہونچ جاتا ہے، منٹ ميں مناسب مقدار انفيکشن کو زائل کرنے کے ليے کافى ہے. اضافی ڈراپ کا بقايا 2 منٹ کے بعد آسانی سے سوکھ جاتا ہے.

ڈاکٹروں کو خدشہ ہوسکتا ہے کہ کیمیائی دوا کان کے ڈراپ کے ذريعہ مشکل ميں اضافہ کرسکتا ہے - جو صحیح ہو سکتا ہے.
اس کے علاوہ، کانوں کے ڈراپ بذات خود بيکٹريا کے جراثيم پيدا کرسکتا ہے- اور ہم ان سے اتفاق رکھتے ہيں۔

لیکن ہمارا ایئر ڈراپ مختلف ہے.

ہمارے ڈراپ خالص طور پر جڑى بوٹيوں سے بنے ہیں، اورانہوں نے ثابت کيا ہے کہ مشکل سے مشکل ترين جراثيم کو بے اثر بنانے کى صلاحيت رکھتے ہيں.

ہر کوئى ہمارے ڈراپ سے مکمل طور پر محفوظ ہے.

ہم نے يہ تجويز بھى پيش کى ہے کہ ہمارے ڈراپ کے ساتھ کوئى اور ڈراپ استعمال نہ کريں اور نہ ہى تيراکى کريں۔ جب تک کان کا پردہ مکمل طور پر بند نہ ہوجائے پانى کا کوئى قطرہ غسل کے دوران کان ميں نہيں داخل ہونا چاہيئے۔ یہ ضروری ہے کیونکہ میونسپل کے پانی میں سپر بیکٹریی پیروجینس ہیں اور انفیکشن کو دوبارہ شروع کر سکتے ہیں.

2) کیا آپ کو 100 فی صد کان کے پردے کی بندش کا یقین ہے؟

انفيکشن کو بے اثر بنانے کا ۱۰۰ في صد يقين ہے ليکن کان کے پردے کى اصلاح کا ۶۰-۷۰ فى صد ہى يقين ہے۔

یہ اقدامات کے ساتھ ایک عمل ہے، اور یہ مندرجہ بالا ميں واضح طور پر بیان کردہ ہیں. ہم نے مکمل طور پر اور ہمیشہ کے لئے بہت سے کان کے پھٹے ہوئے پردوں کو بند کر دیا ہے.
تصديق نامہ کى فہرست ميں ہمارے گاہکوں کى لسٹ ان کے فون نمبروں کے ساتھ ہے۔ علاج کے نتائج سے قطع نظر۔ یہ فہرست مکمل نہیں ہے، کیونکہ بہت سے گاہکوں نے رازداری کے مسائل کی وجہ سے شامل نہ ہونے کو ترجيح دى ہے۔

3) میرے کان سے کوئی پيپ نہيں آتا ہے، کیا اس کا مطلب یہ ہے کہ اس میں کوئی انفیکشن نہیں ہے؟

پيپ مرے ہوئے خيلوں پر مشتمل ہوتا ہےجو سوکھ جاتا ہے ايسا اس وقت ہوتا ہے جب انفيکشن جسم کى قوت مدافعت اور يا دوا سے لڑتا ہے۔

اگر مواد ہر وقت باہر آ رہا ہے تو، اس سے یہ پتہ چلتا ہے کہ انفیکشن اب بھی موجود ہے.

کبھی کبھی، ابتدائی طور پر کوئی مواد نہیں ہوتا ہے، لیکن جب آپ ہمارے کان کا ڈراپ لینا شروع کرتے ہیں، یہ شروع ہوتا ہے. اس کا مطلب ہے کہ انفیکشن غیر معمولی تھا. اینٹی بائیوٹکس یا دوسری وجہ سے خشک ہو چکا ہوتا ہے، لیکن ختم نہیں ہوا ہوتا ہے۔

جيسا کہ ہمارا ڈراپ دوبارہ موجودہ انفيکشن سے لڑتا ہے، مردہ خليے پيدا ہو جاتے ہيں اور پيپ بن کر باہر آجاتے ہيں۔

جب تک سوراخ کى مکمل اصلاح ہو نہ جائے ہر کسى کو اس بات کا خيال رکھنا چاہيئے کہ پبلک سپلائى واٹر اس ميں نہ جائے۔ کيوں پبلک واٹر سپلائى ميں موجود خراب بيکٹريا کى وجہ سے پھر سے انفيکشن ہوسکتا ہے، يا اس ميں اضافہ کرسکتا ہے۔

غسل، تیراکی یا مذہبی غسل کے دوران اس انفیکشن کا خطرہ ہے.
لہذا غسل کے دوران پانى سے بچنے کے لئے کاٹن کا استعمال کرنا چاہيئے۔

ایک بار جب پيپ ہمارے ڈراپ سے مکمل طور پر بند ہوجاتا ہے تو ہم کہہ سکتے ہیں کہ انفیکشن مکمل طور پر چلا گیا ہے.

4.) کیا ہم ویديا راج انل سے مل سکتے ہیں اور دستى طور پر ڈراپ لے سکتے ہیں؟

نہيں۔ ہم يہاں تفصیل میں سب کچھ بیان کرتے ہیں. باقی آپ ای میل کال کریں اور يا اى ميل بھیج سکتے ہیں.

ہمارے پاس تمام کان کے مسائل کے لئے یہ حتمی علاج ہے اور کسی دوسرے دوا کی تجويز نہیں ديں گے.

عام طور پر، جب آپ ڈاکٹر کو دیکھتے ہیں، تو وہ اس کى ۱۰ فى صد بھى وضاحت نہيں کرتے ہيں جتنى ہم کر رہے ہيں۔ اور ویڈیاس کے طور پر - جڑى بوٹيوں کے ماہرين ہم صحت سے متعلق معاملات کا حل کل طور پر کرتے ہیں، لہذا ہمارا ہربل ڈراپ کسى تشخيص سے قطع نظر کارگر اور معاون ہوتا ہے.

سوراخ کے تمام مسائل اسی طرح ہیں.

کیمیکل پر مبنی جدید دوائی یا ایلو پیتھی کے برعکس ہے، جہاں مسئلہ کا صرف ایک مخصوص حصہ ٹارگٹ کیا جاتا ہے، باقی منفى اثرات ميں الجھے ہوتے ہیں.

5) آج کل کان کے پردے کى سرجرى عام طور سے کيوں ناکام ہوتى ہے اور کان ميں ٹيوب يا چھلا وغيرہ ڈالنا کان کے درميانى حصے کے ليے خطرناک ہوسکتا ہے۔

آج کل يہ زيادہ تر کيوں ناکام ہوتے ہيں؟

ہر سال رياستہائے متحدہ امريکہ ميں بيس لاکھ نوکيلى چيز جيسے کان کا ٹيوب يا چھلا ايک صحيح سالم کان کے پردے ميں ايک چھوٹا سا سوراخ بناکر ڈالا جاتا ہے زیادہ تر وہ بچوں پر اس سرجری کو انجام دیتے ہیں.

یہ کان کی ٹیوبیں ایک یا دو سال میں گر جاتے ہیں اور یہ فرض کیا جاتا ہے کہ کان کا سوراخ خود ہی بند ہوجاتا ہے - جلد ہی.

یہ چھلا ایک چھوٹے سرجیکل سوراخ کے ذریعہ ایک سرنگ بننے کے لئے رکھی جاتی ہیں تاکہ کان کے پردے کے پیچھے سے پيپ نکل سکے اور کان کے پردے کے پیچھے جمع نہ ہوجائے. کیونکہ اگر ایسا ہوتا ہے تو کان کے پردے پر دباؤ بڑھ جاتا ہے جس کى وجہ سے اس کے پھٹنے کا امکان بڑھ جاتا ہے۔

پيپ پھوڑے یا کان کے درميانى حصے ميں دائمی انفیکشن کی وجہ سے ہے جو اب زبانی اینٹی بائیوٹک کے ذريعے بے اثر یا قتل یا ختم نہیں ہوتا ہے.

وسط کان کا انفیکشن زیادہ تر اینٹی بائیوٹک مزاحم بن جاتے ہیں - لہذا صرف يہى متبادل رہ جاتا ہے کہ کان کے پردے کے بيچ سے ميکانيکى سرنگ بنائى جائے تاکہ کم از کم کان کا پردہ پھاڑ کر ايک بڑا سوراخ ہونے سے بچا لیا جائے۔
امید ہے کہ بچے کی قوت مدافعت عمر کے ساتھ بہتر ہوجائے گی، انفیکشن سے قدرتی طور پر لڑا جاتا ہے اور بے اثر ہوجاتے ہیں، اور پھر جب کان کا ٹیوب یا چھلا گر جاتے ہیں یا ہٹا دیا جاتا ہے تو وہى قوت مدافعت بچے ہوئے چھوٹے سے سوراخ کو بند کر ديتی ہے.

يہ کان کے ٹيوب کے بارے ميں مکمل کہانى يا منطق ہے۔

ليکن جب بڑا بيکٹريائى انفيکشن بن جاتا ہے، کان کے ٹيوب کے گرنے کے بعد، تو سوراخ بند نہيں ہوتا ہے بلکہ وقت کے گذرنے کے ساتھ بيکٹريا کى تعداد بڑھتى چلى جاتى ہے اورممکنہ طور پر سوراخ کے بڑے ہونے کا خدشہ بڑھ جاتا ہے۔

يہى معاملہ کان کے پردے ميں موجود چھيد کى اصلاح کے ليے يا قوت سماعت کو درست کرنے کى جراحى ميں ہوتا ہے۔
سرجری سے پہلے سرجن آپ کے اساسى انفیکشن کو ختم کرنے کے لئے زبانی اینٹی بائیوٹکس دیتا ہے، جس کے نتیجے میں کان کا پردہ قدرتی طور پر خود بخود بند نہیں ہوتا ہے۔

جب ڈاکٹر بصرى طور پر کوئی انفیکشن نہیں دیکھتا تو وہ سمجھتا ہے کہ یہ ختم ہوگیا ہے.
اس بات کا تعین کرنے کے لئے کہ مکمل انفیکشن چلا گیا یا نہیں وہ کوئى بھی مائکروبائیو لوجی ٹیسٹنگ نہیں کرتا ہے۔
کبھی کبھی ایسا کرنا غیر معمولی ہوتا ہے.
ليکن انفيکشن بہت ہى چھوٹا سا بيکٹريا اور فنگس ہوتا ہے اور اينٹى بايوٹک کے عرصہ دراز تک استعمال کرنے سے ان کا کچھ حصہ باقى رہ جاتا ہے يا يہ سپر بگ يا سپر بيکٹريا، اينٹى بايوٹک مزاحم بن جاتا ہے اور ڈاکٹر کان کے پردے کى اصلاح کرتا ہے، یہ ایک کمزور بنیاد پر ایک عمارت کی تعمیر کی مانند ہے ....

یہ عمارت ایک دن ڈھہ جانے والی ہے.

لہذا یہ سپربگ کچھ سال یا اس کے بعد دوبارہ بار بار مرمت شدہ کان کے پردے کو ختم کر دیتے ہیں.

یہ آج کل زیادہ عام اور بار بار ہوتا ہے.

ہم سپر بگ کے زمانے میں رہ رہے ہیں- جب تک کوئى ايسا انيٹى بايوٹک نہیں ليتا جو اينٹى بايوٹک مزاحمتى سپر بگ کو مارتا ہے ، اس طرح کى سرجری کامیاب نہيں ہوتى ہے۔

5) کان کے پردے کے اصلاح کی سرجری کے بعد کيا ہم اپنے کان کے پردے کو محفوظ رکھنے کے ليے ان کان کے ڈراپ کا استعمال کر سکتے ہيں؟

اگر آپ کے کان کا پردہ سرجرى سے ٹھيک ہوجاتا ہے تو آپ ايک مہينے انتظار کيجيئے پھرايک سال تک ہفتے ميں ايک بار دو منٹ کے ليے ہمارا رقيق کان کے ڈراپ کا چار قطرہ کان ميں ڈاليں، جب تک آپ يقين نہ کرليں کہ اصلاح شدہ کان کا پردہ اس سپر بگ کى وجہ سے جو اينٹى بايو ٹک کى مدد سے مرا نہيں ہے ، ناکام نہ ہونے پائے۔ ايسا آپ کو سرجرى سے پہلے اور بعد کرنا ہوتا ہے۔

اس طريقے سے آپ مکمل طور پر مناسب وقت پر ان بگس کو بڑھنے سے اور اصلاح شدہ کان کے پردے کو ناکام ہونے سے روک سکتے ہيں۔

6) جب آپ کے دونوں کان کے پردے ميں چھيد ہو تو پہلے ايک کان ميں ہمارا ڈراپ استعمال کيجيئے اور جب آپ کو يقين ہو جائے تو دوسرے ميں بھى استعمال کيجيئے۔

7) کبھى کبھار چھيد کا انفيکشن زيادہ ہوجاتا ہے اور اس طرح کى صورت حال ميں جب يکساں رقيق ڈراپ پہلی بار شامل کريں گے اس وقت بہت زيادہ درد ہوگا اور اس کا اثر لمبے وقت رہے گا، آدھا دن يا اس سے زيادہ تک۔
اس طرح کے حالات میں کوئى بھى شخص رقيق ڈراپ کی بوتل میں سے 50 فی صد لے کر صاف پانی کا اضافہ کرلے۔ ناک کے ڈراپ کے ساتھ جارى رکھيں ليکن يہ نيا اضافى رقيق ڈراپ اسى وقت استعمال کريں جب درد اور بھارى پن حد سے زيادہ بڑھ جائے۔
رقيق ڈراپ ميں ۲۵ فى صد خالص عرق ہوتا ہےاور باقى ۱۰ ملى ليٹر صاف پانى۔ تجزيہ کے طور پر آپ ايک ۱۰ ملى ليٹر کی بوتل لے کر ايک نيا رقيق ڈراپ عليحدہ بنا سکتے ہيں۔

😎 اورل کیمیائی اینٹی بائیوٹکس صرف انفیکشن کو خشک کرتے ہیں - کوئی بھی نہیں جانتا ہے کہ انفیکشن مکمل طور پر بے اثر ہوا ہے یا نہیں. اس کے علاوہ، اگر درد، سوزش یا بھاری پن برقرار رہتا ہے - تو ايسے لوگوں کو کان کى ٹیوب صاف کرنے کے سوا کچھ بھی نہیں کرنا ہے. مسئلہ یہ ہے کہ وہ صاف کرنے کے لئے ويکيوم کلينر آلہ یا ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہیں. اگر ویکیوم پریشر میں اضافہ ہوتا ہے، تو خود صفائی کرتے وقت کان کا پردہ پھٹ سکتا ہے. بہت سے ایسے معاملات ہم نے ديکھے ہیں.
لہذا برائے مہربانی آپ اپنے اہل خانہ اور دوستوں سے کہيں کہ کان کى زرد رنگ کى جھلى يا سرنگ کو صاف نہ کريں، خاص طور سے ويکيوم آلہ کے ذريعے۔
ہمارا رقيق ڈراپ ہى کان کى گندگى آہستہ آہستہ قدرتى طور پر ختم کر سکتا ہے۔ یہ اس طرح کا ایک بیرونی ماحول پیدا کرے گا، بعد میں قدرتی طور پر کان کی گندگى کو خود ہى صاف کرے گا، ايسا کرنا چاہيئے. صفائی کے لئے کسی بھی کان بڈ کا استعمال نہ کریں.

9) کبھی کبھی رقيق ڈراپ کان ميں درد اور بھارى پن کچھ بڑھا ديتا ہے اور لمبے وقت تک رہتا ہے- ايسا صرف چند حالات میں ہوتا ہے.

اس طرح کے معاملات میں، رقيق ڈراپ بھی ہر دوسرے دن یا بعد میں استعمال کرنا چاہئے - يہاں تک کہ درد اور بھارى پن مکمل طور پر ختم ہوجائے.

ایسے معاملات پیچیدہ اور شدید انفیکشن کے مسائل پيدا کرتے ہیں. ہمیں اس کے بارے میں بہت صبر کرنا ہوگا، اور مختصر مدت میں نتائج کى توقع نہيں کرنی چاہيئے.

اسى طرح دائمى انفيکشن کى شفايابى اور کان کے پردے ميں سوراخ کو پر کرنے کى نشو نما، استحکام، نظم و ضبط اور صبر کا کھيل ہے

اس کے علاوہ جو کچھ ہو رہا ہے اس سلسلے ميں آپ کو ذہین، ہوشیار اور خود سے محاسبہ نفس کا عادى ہونا چاہئے، اپنے آپ کے علاج ميں ہمارے ڈراپ کے ذريعہ تبديلى اور حکمت عملی کو تیار کریں۔ اور ہم يہاں اپنى مجموعی معلومات پیش کرتے ہیں اور جامع مشورہ دیتے ہیں.

paypal.com PayPal is the faster, safer way to send money, make an online payment, receive money or set up a merchant account.

Telephone